75

پولیس تھانہ صدر قصور ریکارڈ یافتہ جرائم پیشہ غنڈہ عناصر کے خلاف دو ماہ کا عرصہ گزرنے کے باوجود کاروائی کرنے سے گریزاں، متاثرین و اہلیان علاقہ سراپہ احتجاج

قصور (بیورو رپورٹ میاں خلیل صدیق آراٸیں 49 نیوز یوکے) پولیس تھانہ صدر قصور ریکارڈ یافتہ جرائم پیشہ غنڈہ عناصر کے خلاف دو ماہ کا عرصہ گزرنے کے باوجود کاروائی کرنے سے گریزاں، متاثرین و اہلیان علاقہ سراپہ احتجاج ڈی پی او قصور سے ملزمان کے خلاف مقدمہ درج کرنے کا مطالبہ۔محمد شریف نامی شہری نے پولیس تھانہ صدر قصور میں 22نومبر 2021 کو ایک درخواست دی کہ ٹولو والہ کی رہائشی جمیلہ بیگم نامی عورت نے اپنے خاوند جو کہ ایک ریکارڑ یافتہ ڈاکو اور چور سلیم بگھی اور دیگر غنڈہ گرد عناصر کے ہمراہ بستی قادر آباد میں محمد شریف نامی شہری کی مارکیٹ پر غنڈہ گردی کرتے ہوئے توڑ پھوڑ کی اور ہزاروں روپے مالیت کا سامان اٹھا کر لے گئے اور وہاں پر موجود کرایہ داران کو حراساں کیا اور الٹا 15 پر جھوٹی کال کر کے خود ساختہ تشدد کا ڈرامہ رچایا مالک مارکیٹ نے فوری طور پر متعلقہ تھانہ صدر قصوربرائے کاروائی درخواست دی جس پر چوکی انچارج رضوان اصغر نے موقع ملاحظہ کیا اور وقوعہ کی تصدیق کی. ڈی پی او قصور نے ڈی ایس پی لیگل حاجی محمد اسلم اور بعد ازاں ڈی ایس پی لیگل شیخ فیاض کو انکوائری آفیسر مقرر کیا مقامی پولیس نے غنڈہ گرد ملزمان کو گرفتار کرنے کی بجائے حافظ عثمان اور حکیم وقاص وغیرہ کو گرفتار کر لیا اور اس شرط پر کہ وہ انکوائری مکمل ہونے تک دوکانیں بند رکھیں گے انہیں دو گھنٹے بعد رہا کر دیا ایس ایچ او فیاض جوئیہ ڈی ایس پی حاجی محمد اسلم ڈی ایس پی لیگل شیخ محمد فیاض نے موقع پر شہادتیں حاصل کرکے تصدیق کی مگر تاحال ملزمان کے خلاف مقدمہ درج ہوا اور نہ15 ایمرجنسی نمبر پر غلط کال پر جمیلہ بیگم کے خلاف تادیبی کاروائی اور نہ متاثرین دوکانداران کو دوکانیں کھولنے کی اجازت مل سکی. متاثرین دوکانداران اور اہلیان محلہ نے ڈی پی او قصور سے ملزمان کے خلاف مقدمہ درج کرنے اور انصاف کا مطالبہ کرتے ہوئے انصاف کی اپیل کی ھے

اس خبر پر اپنی رائے کا اظہار کریں

اپنا تبصرہ بھیجیں