78

قصور شہر اور گردونواح میں مضر صحت کیمیکل سے تیار ہونے والا مصنوعی دودھ کی فروخت کھلے عام جاری

قصور(میاں خلیل صدیق آرائیں سے)

قصور شہر اور گردونواح میں مضر صحت کیمیکل سے تیار ہونے والا مصنوعی دودھ کی فروخت کھلے عام جاری، شہری اور خاص کر بچے کیمیکل ملے دودھ پینے سے پیٹ اور انتڑیوں کی بیماری میں مبتلا ھونے لگے۔شہر اور گردونواح میں وسیع پیمانے پر تیار ہونے والے مصنوعی دودھ کی سپلائی ضلع بھر کی مختلف دوکانوں میں کی جانے لگی کوئی پوچھنے والا نہیں سب اپنا اپنا حصہ لینے میں مصروف۔ انتہائی جان لیوا کیمیکل سے تیارہونے والا مصنوعی دودھ کی فروخت سرعام جاری۔مضر صحت اور جان لیوا کیمیکل سے تیا رہونے والا دودھ ملاوٹ شدہ کھویا، پنیر کے استعمال سے شہری موذی امراض میں مبتلا ہونے لگے جب کہ مصنوعی دودھ بنانے کیلئے خشک دودھ، سنگھاڑے کا پا?ڈر اور چند زہریلیکیمیکل کا استعمال کیا جاتا ہے، ان سب چیزوں کو ملا کر مکس کیا جاتا ہے اور سب سے آخر میں دودھ کا ذائقہ لانے کیلئے تھوڑی سی مقدار میں دودھ ڈالا جاتا ہے۔عوامی سماجی صحافتی اور شہری حلقوں نے ڈی سی قصور اور پنجاب فوڈ اتھارٹی سے مطالبہ کیا ہے کہ انسانی جانوں سے کھیلنے والوں کے خلاف سخت کارروائی کی جائے،،

اس خبر پر اپنی رائے کا اظہار کریں

اپنا تبصرہ بھیجیں