92

سرکاری پانی کی موٹر 4 روز سے خراب، شہری پانی کی بوندبوند کو ترس گئے

+92 321 7204280: قصور (میاں خلیل صدیق آرائیں سے)

سرکاری پانی کی موٹر 4 روز سے خراب، شہری پانی کی بوندبوند کو ترس گئے۔ سول ڈیفنس آفس قصور کے باہر نصب سرکاری پانی کی موٹر میونسپل کارپوریشن کی نااہلی کے باعث تاحال ٹھیک نہ ہو سکی۔ علاقہ مکینوں کا میونسپل کارپوریشن اور ڈپٹی کمشنر آفس کے باہر احتجاج کا اعلان۔ڈپٹی کمشنر قصور سے فوری نوٹس لے کر علاقہ مکینوں کو پانی کی فراہمی کا مطالبہ کیاہے۔ تفصیل کے مطابق سول ڈیفنس آفس کے باہر نصب سرکاری پانی کی موٹر جو اکثر خراب رہتی ہے اور میونسپل کارپویشن کے کرپٹ ملازمین کی ”کمائی“ کا بڑا ذریعہ ہے۔ اس سرکاری موٹر سے کوٹ فتح دین خان، ڈگری کالج روڈ، دھوڑ کوٹ، ڈنگی پورہ، جناح کالونی، کوٹ اعظم خان و دیگر علاقوں کے مکینوں کو سرکاری پانی کی فراہمی ہوتی ہے جو کہ حسب روایت چار روز سے خراب اور ان علاقوں کے مکین پانی کی بوند بوند کو ترس گئے ہیں۔ علاقہ مکینوں نے میونسپل کارپویشن کے ذمہ داران کو اس بارے شکایت کی مگر افسوس کہ تاحال ان کی اس شکایت کا ازالہ نہ کیا جا سکا ہے۔علاقہ مکینوں حاجی نوید گجر،جاوید اسحاق،صابر علی شہزادہ،عبدالرحمن جامی،ککی گجر، میاں اورنگ زیب صفدر و دیگر کا کہنا ہے کہ یہ سرکاری موٹر اکثر خراب رہتی ہے جسے عارضی طور پر ٹھیک کر دیا جاتا ہے مگر اس کا مستقل حل نہیں کیا جاتا۔ اب چار روز سے ہم پانی کی بوند بوند کو ترس گئے ہیں۔ نمازیوں سمیت گھروں میں پانی کی شدید قلت سے سخت پریشانی کا سامنا کرنا پڑ رہا ہے مگر سرکاری موٹر کو ٹھیک کرنے سے متعلق میونسپل کارپویشن سنجیدگی نہیں دکھا رہا اور علاقہ مکینوں کی پریشانی کا ازالہ نہیں کیا جارہا۔ اگر جلد سرکاری موٹر کو ٹھیک نہ کیا گیا تو میونسپل کارپوریشن اور ڈپٹی کمشنر آفس کے سامنے احتجاج کریں گے۔ ڈپٹی کمشنر قصور فوری نوٹس لے کر سول ڈیفنس آفس کے باہر نصب سرکاری موٹر کو ہنگامی بنیادوں پر ٹھیک کروائیں تاکہ علاقہ مکینوں کو سرکاری پانی کی فراہمی ہو سکے اور ان کی مشکلات میں کمی آسکے

اس خبر پر اپنی رائے کا اظہار کریں

اپنا تبصرہ بھیجیں