82

الہ آباد اور گردونواح میں آلودگی بڑھ گئی محکمہ ماحولیات منتھلیاں لیکر خاموش تماشائی

قصور(میاں خلیل صدیق آرائیں سے)

الہ آباد اور گردونواح میں آلودگی بڑھ گئی محکمہ ماحولیات منتھلیاں لیکر خاموش تماشائی وزیر اعلیٰ سے نوٹس لینے کا مطالبہ تفصیلات کے مطابق الہ آباد، تلونڈی، ارزانی پور اور گردونواح میں فضائی آلودگی خطرناک حد تک بڑھ چکی ہے لوگ فصلوں کی باقیات کو آگ لگا کر جلا رہے ہیں رائس ملز والوں نے کوئی انتظامات نہی کر رکھے برلب سڑکوں پر قائم زیادہ تر رائس ملز سارا دن دھوئیں کے بادل چھائے رہتے ہیں گردو غبار اور آلودگی نے شہریوں اور راہگیروں کا جینا دوبھر کر رکھا ہے اینٹوں کے بھٹوں کی صورتحال بھی یہی ہے بھٹہ مالکان نے اپنے بھٹے زگ زیگ ٹیکنالوجی پر منتقل کرنے کی بجائے روائتی پرانے طریقے سے بھٹے چلا رہے ہیں جو سارا دن کالے دھوئیں کے بادل چھوڑتے رہتے ہیں محکمہ ماحولیات قصور کے ذمہ داران مبینہ طور پر منتھلیاں لیکر خاموش تماشائی بنے ہوئے ہیں باوثوق ذرائع کے مطابق محکمہ ماحولیات کا ایک ملازم آ کر رائس ملوں اور اور اینٹوں کے بھٹوں سے منتھلی وصول کرتا ہے مقامی شہریوں نے وزیر اعلیٰ پنجاب سے نوٹس لینے کا مطالبہ کیا ہے اور کہا ہے کہ تحصیل چونیاں میں دو سو سے زائد رائس ملز اور اینٹوں کے بھٹے فضائی آلودگی کا سبب بن رہے ہیں لیکن سرکاری انتظامیہ خاموش تماشائی بنی ہوئی ہے اور مجرمانہ غفلت کا مظاہرہ کر رہی ہے

اس خبر پر اپنی رائے کا اظہار کریں

اپنا تبصرہ بھیجیں