77

اربوں روپے کی لاگت سے بننے والی عالمی میعار کی فیروز پور روڈ متعلقہ حکام کی عدم دلچسپی کی وجہ سے کھنڈر میں تبدیل ہونا شروع ہو گئی

قصور(میاں خلیل صدیق آرائیں سے ) اربوں روپے کی لاگت سے بننے والی عالمی میعار کی فیروز پور روڈ متعلقہ حکام کی عدم دلچسپی کی وجہ سے کھنڈر میں تبدیل ہونا شروع ہو گئی، غیر قانونی ہاؤسنگ سوسائٹیوں کے گٹروں کا پانی سڑک پر بہنے سے جگہ جگہ گڑھے بن گئے، ٹال ٹیکس کے نام پرجمع ہونے والی کثیر رقم سڑک کی مرمت کی بجائے افسران کی شاہ خرچیوں پر صرف ہونے لگی، سڑک پر پڑنے والے گڑھوں کی وجہ سے ٹائروں کا پھٹنا معمول بن گیا،تفصیلات کے مطابق مشرف دور میں اربوں روپوں کے کثیر سرمائے سے بننے والی عالمی میعار کی سڑک فیروز پور روڈ موجودہ دور میں متعلقہ حکام کی مبینہ غفلت اور لاپرواہی کے سبب چند سالوں بعد ہی کھنڈر میں تبدیل ہونا شروع ہو گئی ہے،سڑک سے ملحقہ چند غیر قانونی ہاؤسنگ سوسائٹیوں نے اپنا نکاسی آب کا سسٹم نہ ہونے کی وجہ سے گٹروں کا غلیظ پانی فیروز پور روڈ سے ملحقہ نالہ میں ڈال دیا ہے جو اکثر بند ہونے کی وجہ سے گٹروں کا پانی سڑک پر بہنا شروع ہو جاتا ہے جس کی وجہ سے کثیر سرمائے سے بننے والی سڑک جگہ جگہ سے ٹوٹ پھوٹ کا شکار ہے، متعلقہ اعلیٰ حکام نے تمام تر صورت حال سے آگہی کے باوجود تاحال مذکورہ ہاؤسنگ سوسائٹیوں کے خلاف ابھی تک کسی بھی قسم کی کوئی کاروائی نہیں کی،فیروز پور روڈ پر بنے ٹال پلازہ سے محکمہ کو سالانہ کروڑوں روپے آمدنی حاصل ہوتی ہے لیکن گذشتہ دو سالوں سے سڑک کی مرمت پر ایک کھوٹی کوڑی بھی خرچ نہیں کی گئی، محکمہ کی اس مبینہ غفلت اور عدم توجہی کی وجہ سے سڑک پر جگہ جگہ گڑھے بن گئے ہیں جس کی وجہ گاڑیوں کے ٹائر پھٹنا اور حادثات روزانہ کا معمول ہیں، شہری و سیاسی اور سماجی تنظیموں کے نمائندگان نے وزیر اعلیٰ پنجاب سردار محمد عثمان بزداراوروزیر شاہرات پنجاب سے فوری نوٹس لیکر ٹوٹ پھوٹ کی شکار فیروز پور روڈ کی اصلاح احوال کا مطالبہ کیا ہے۔

اس خبر پر اپنی رائے کا اظہار کریں

اپنا تبصرہ بھیجیں